وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے اسمبلی توڑنے کی ایڈوائس گورنر کو بھیج دی

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے اسمبلی توڑنے کی ایڈوائس گورنر کو بھیج دی

پشاور(نیوز رپورٹر) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے صوبائی اسمبلی کی تحلیلی کی سمری پر دستخط کر تے ہوئے گورنر کو ارسال کر دیا آئین کے مطابق گورنر کی جانب سے سمری پر دستخط نہ کرنے کی صورت میں48   گھنٹے بعد اسمبلی تحلیل تصور ہوگی گورنر خیبر پختونخوا غلام علی پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ اسمبلی کی تحلیلی پر دستخط نہیں کرینگے

 

 منگل کے روز کابینہ اجلاس میں وزیر اعلی محمود خان نے اعلا ن کیا تھا کہ وہ آج ہی اسمبلی کو تحلیل کرینگے وزیر اعلیٰ کی جانب سے جاری سمری کے متن کے مطابق آئین کے آرٹیکل 112 کی ذیلی شق 1کے تحت صوبائی اسمبلی کی تحلیلی کی ایڈوائس ارسال کی جاتی ہے

 

 اسمبلی تحلیلی کی سمری پر دستخط کے بعد وزیر اعلیٰ محمود خان نے کہا کہ انہوں نے عمران خان سے وعدہ کیا تھا رات دس بجے سمری پر دستخط کرکے گورنر کو ارسال کر دونگا صوبائی اسمبلی کی تحلیلی کے حوالے سے جو ایڈوائس ہے اس پر دستخط کرکے گورنر کو ارسال کر دی ہے

 

 خیبر پختونخوا پر سوا چار سال حکومت کی ہم سے جتنا ہوسکا اپنے عوام کیلئے کیا سمری کے بعد صوبائی اسمبلی تحلیل ہوگی اورتین ماہ کے اندر ضمنی انتخابات ہونگے جس میں تحریک انصاف بھرپور حصہ لے گی دوبارہ دو تہائی سے اکثریت سے صرف خیبر پختونخوا میں نہیں بلکہ پورے پاکستان میں حکومت بنائیں گے

 

 تحریک انصاف اپنی کارکردگی کی بنیاد پر عوام کے پاس جائے گی جو وعدے کئے تھے اس کو پورا کرنے کی کوشش کی جو لوگ سمجھتے تھے کہ وہ ایڈوائس نہیں بھیجیں گے یہ ان کی بھول تھی خیبر پختونخوا میں امپورٹڈ حکومت کی اپوزیشن ہے ان کو بتانا چاہتا ہوں کہ نہ انہوں نے کسی پیغام بھیجا تھا اور نہ ہی کسی کو پیغام بھیجوں گا عمران خان کہیں گے تو اپنی جان بھی دینے کیلئے تیار ہیں ی یہ تو صرف اسمبلی کی تحلیلی تھی جو عمران خان کا حکم تھا ان کا حکم سر آنکھوں پر ،وزیر اعلیٰ محمود خان نے خیبر پختونخوا کے عوام کو مبارکباد بھی دی۔

 

پی ٹی آئی ذرائع کے مطابق صوبائی اسمبلی کی تحلیل حکمران جماعت کے ممبران اسمبلی کو شدید پریشانی کا سامنا ہے آخری وقتوں میں صوبے کے پاس فنڈز نہ ہونے کے باعث ایم پی ایز کو بھی مناسب فنڈز فراہم نہیں ہو سکے فنڈز کی عدم فراہمی کے باعث عوامی فلاحی کاموں اور الیکشن کے لئے اخراجات نہ ہونے کے سبب ایم پی ایز ڈپریشن کا شکارایم پی ایز آپس میں سر جوڑ کر بیٹھ گئے ایم پی ایز آئندہ الیکشن کے اخراجات کے حوالے سے شدید پریشان ہیں