قاری الیاس کی نماز جنازہ ادا، قتل کیخلاف باجوڑ میں شٹر ڈاؤن

قاری الیاس کی نماز جنازہ ادا، قتل کیخلاف باجوڑ میں شٹر ڈاؤن

باجوڑ(نمائندہ شہباز) باجوڑ میںجے یو آئی رہنماء قاری الیاس شہید کی نماز جنازہ ادا کردی گئی۔ ہزاروں افر اد کی شرکت، مکمل شٹرڈاون ہڑتال رہا۔

 

نماز جنازہ ڈپٹی کمشنر باجوڑ کے دفتر کے سامنے مین روڈ پر ادا کی گئی جہاں پر دھرنا جاری تھا۔نماز جنازہ میں سیاسی جماعتوں کے قائدین، قبائلی مشران، علمائے کرام، طلبہ، تاجر برادری، وکلاء برادری، سماجی تنظیموں کے عہدیداروں، صحافیوں، اور مختلف مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے ہزاروں افراد نے شرکت کی۔

 

شہید کا نماز جنازہ دھرنے کے جگہ پر ادا کیاگیا۔ دھرنے کے روز ضلع باجوڑ کے تمام بازاریں بند رہی۔ تاجر برادری کے کال پر مکمل شٹرڈاون ہڑتا ل رہا اورتمام دکانیں بند رہی۔ دھرنے کے مقام پر دوسرے روز ہزاروں افرادجمع رہے اور حکومت کے خلاف نعرہ بازی کرتے رہے۔

 

دوسرے جانب ناوگئی بازار میں بھی ایک بہت بڑا احتجاجی مظاہرہ کیاگیا۔ ناوگئی بازار میں مولانا خان زیب اور علی بہادر کے کال پر مکمل شٹرڈاون ہڑتال کیاگیا۔ عنایت کلی بازار میں صدر عمران ماہر کے کال پر مکمل شٹرڈاون ہڑتال رہا۔ خاربازار میں صدر حاجی لعلی شاہ کے کال پر مکمل شٹرڈاون ہڑتال رہا جبکہ ضلع کے دیگر تمام بازاریں بھی بند رہی۔

 

ضلع باجوڑ کے ناواگئی بازار میں سول کالونی خار کے سامنے قاری الیاس کی شہادت کیخلاف دھرنا دیا گیا اور علاقے میں بدامنی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کیاگیا۔ مظاہرے سے مولانا خانزیب،قاضی عبد المنان، شیخ الحدیث مولانا عطاء اللہ رحمانی ، اشاعت التوحید ناواگء کے امیر مولانا محمد طیب،صاحبزادہ ملنگ جان، مولنا گل زدین،مولنا انوار الدین نے خطاب کیا۔

 

باجوڑ کے ضلعی عدالت میں باجوڑ بار ایسوسی ایشن کے کال پر مکمل ہڑتال رہا اور عدالتی کاروائی معطل رہی۔ ہڑتال کے باعث کوئی بھی وکیل پیش نہیں ہو ا۔