ٹکٹوں کی تقسیم پر پی ٹی آئی اور جے یو آئی لکی اندرونی اختلافات کا شکار 

ٹکٹوں کی تقسیم پر پی ٹی آئی اور جے یو آئی لکی اندرونی اختلافات کا شکار 

لکی مروت( نمائندہ شہباز) ضلع لکی مروت میں حالیہ بلدیاتی انتخابات کے دوران تحصیل میئر شپ کی سیٹوں پر ٹکٹوں کی تقسیم پر جے یو آئی اور پی ٹی آئی میں اندرونی اختلافات کھل کر سامنے آگئے۔

 

تحصیل لکی مروت کی میئر شپ کے لئے جے یو آئی کی طرف سے سابق تحصیل ناظم حاجی ہدایت اللہ خان کو ٹکٹ جاری کیا گیاتھا جس پر پارٹی ایم پی اے منور خان مروت اور ان کے احمد خیل خاندان نے ناک بھوں چڑھائی ، صورتحال کی نزاکت بھانپتے ہوئے پارٹی نے ہدایت اللہ خان سے ٹکٹ لے کر ضلعی امیر مولانا عبدالرحیم کو جاری کردیا جو اب جے یو آئی کی طرف سے تحصیل لکی مروت کی میئر شپ کے امیدوار ہیں۔

 

دوسری طرف ایم پی اے منور خان نے ٹکٹ کی تقسیم کے اس پورے عمل کو اپنے خاندان کے خلاف سازش قرار دیا اور احمد خیل ہاؤس میں ایک بڑے اجتماع سے خطاب کے دوران کہا کہ وہ حیران ہیں کہ پارٹی نے ایسے لوگوں کو کیوں گود میں بٹھا رکھا ہے جنہوں نے 2018کے جنرل الیکشن میں ان کی بطور جے یو آئی امیدوار مخالفت کی تھی۔

 

ان کے مطابق تحصیل میئر شپ کے لئے ان کے بھتیجے اور سابق ایم پی اے ظفر اللہ خان مروت امیدوار ہیں اور جے یو آئی کے ٹکٹ کے وہی اصل حقدار ہیں کیونکہ ان کے خاندان کی پارٹی کے لئے خدمات اور قربانیاں ہیں۔

 

تحصیل میئر شپ کے لئے ٹکٹ کے معاملے پر ان اختلافات پر مٹی ڈالنے کے لئے جے یو آئی کے صوبائی امیر سینیٹر مولانا عطاء الرحمان، ان کے بھائی ایم پی اے مولانا لطف الرحمان اور ایم پی اے محمود احمد بیٹنی نے ایم پی اے منور خان اور ان کے بھائی سابق ڈسٹرکٹ کونسلر انجینئر امیر نواز خان سے الگ الگ ملاقاتیں کیں جو بار آور ثابت نہ ہوئیں اور اس وقت تحصیل میئر شپ کے لئے اکھاڑے میں جے یو آئی کی طرف سے ضلعی امیر مولانا عبدالرحیم اور پارٹی ایم پی اے منور خان مروت کی طرف سے ان کے بھتیجے اور سابق ایم پی اے ظفر اللہ خان موجود ہیں۔

 

میئر شپ کے لئے ٹکٹوں کے اجراء اور تقسیم پر پی ٹی آئی میں بھی اختلافات اب ڈھکے چھپے نہیں رہے ، سیف اللہ برادران پاکستان تحریک انصاف کے اتحادی تھے لیکن ان سے مشاورت کی زحمت گوارا نہیں کی گئی، یہی نہیں بلکہ پارٹی ایم پی اے اور سابق صوبائی وزیر ڈاکٹر ہشام انعام اللہ کو بھی یکسر نظر انداز کردیا گیا۔ ان اختلافات کی وجہ سے تحصیل لکی مروت اور تحصیل غزنی خیل میں میئر شپ کے الیکشن کی دلچسپ صورتحال ہے۔

 

پی ٹی آئی کے ضلعی جنرل سیکرٹری شفقت اللہ خان خوئیداد خیل سیف اللہ برادران اور ڈاکٹر ہشام کی طرف سے لکی مروت کی میئرشپ کے امیدوار ہیں جبکہ تحصیل صدر ڈاکٹر اقبال کو پارٹی کی طرف سے ٹکٹ جاری کیا گیا ہے ، غزنی خیل تحصیل میں پی ٹی آئی نے سلیم خان کو میدان میں اتارا ہے جبکہ سیف اللہ برادران اور ڈاکٹر ہشام اپنے قریبی رشتہ دار ذیشان خان کی کھل کر حمایت کررہے ہیں۔

 

دونوں بڑی سیاسی پارٹیوں میں موجود اختلافات انتخابی نتائج پر اثر انداز ہوں گے تو اس سے سیاسی خاندانوں کو بھی مستقبل میں نئے راستے ڈھونڈھنا پڑیں گے۔