مہنگائی اور بے روزگاری تاریخ کی بلند ترین سطح عبور کر چکی ہے، سردار حسین بابک

مہنگائی اور بے روزگاری تاریخ کی بلند ترین سطح عبور کر چکی ہے، سردار حسین بابک

پشاور۔۔۔ اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ عوامی مسائل حل کرنا اولین ترجیح ہونی چاہیئے۔ عوام بدامنی اور مہنگائی کے ہاتھوں بے چینی کی حالت میں زندگی گزار رہے ہیں۔ مہنگائی اور بے روزگاری تاریخ کی بلند ترین سطح عبور کر چکی ہے۔ ملک کو اندرونی اور بیرونی خطرات درپیش ہیں۔ ایسے حالات میں ملک کے ہر مہذب شہری کو تعمیر کیلئے اپنی توانائیاں صرف کرنی چاہیئے۔

 

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا کہ عوام بنیادی ضروریات کے حصول کیلئے مشکل دور سے گزر رہے ہیں۔ مہنگائی کی طوفان نے ہر گھر کو متاثر کر دیا ہے۔ مرکز اور صوبائی حکومت کی آپس کی لڑائی سے عوام کے مسائل میں مزید اضافہ ہوگا۔ ہمارے صوبے کی بدقسمتی ہے کہ جنگ کی صورت میں مدعی اور دور حکومت میں مکمل نظر انداز۔ ملک کے مسائل اس نہج پر پہنچ گئے ہیں کہ عوام کا اعتماد دن بدن ختم ہوتا جا رہا ہے۔ عوام پہلے سے مایوس اور بے زار ہو چکے ہیں۔ حکومتوں، سیاسی جماعتوں اور ہر طبقہ فکر کے لوگوں کو بنیادی عوامی مسائل کے حل میں سنجیدہ کردار ادا کرنا چاہیئے۔

 

انہوں نے کہا کہ ہمارے صوبے کو ہر دور میں آئینی حقوق ہے محروم رکھا جا رہا ہے۔ پی پی پی اور اے این پی کے دور حکومت میں صوبوں کی خودمختاری کا آئینی فیصلہ تاریخ کا حصہ بن چکی ہے۔  پختونخوا کو آئینی حقوق دینے اور بین الاقوامی تجارت کھولنے سے پختونخوا مرکزی حکومت قرضہ دینے کا قابل بنا جائے گا اور پاکستان کا مالدار ترین صوبہ ہے۔  صوبائی خودمختاری کو یقینی بنانے سے پاکستان ایشیا ٹائیگر بن جائے گا۔ صوبائی خودمختاری یقینی بننے سے ہمارے صوبے میں دن دگنی اور رات چگنی ترقی ہوگی۔ روزگار کے مواقع اور ہمارے لاکھوں نوجوان محنت مزدوری کی عرض سے باہر سے واپس اپنے گھر بار میں روزگار اور کاروبار کے قابل بن جائیں گے۔ صوبائی خودمختاری سے ہمارے صوبے میں انفراسٹرکچر کا جال بچھ جائے گا۔ بیرونی سرمایہ کاری آنے کے امکانات مزید بڑھ جائیں گے اور صوبہ بین الاقوامی تجارتی اور کاروباری منڈی بن جائے گا۔

 

سردار حسین بابک کا مزيد کہنا تھا کہ جو صوبہ ملک کے آمدن میں زیادہ حصہ ڈالتا ہے وہاں کے عوام کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔ ریاست پاکستان کا آئین ہمارے حقوق کا ضامن ہے۔ بنیادی عوامی مسائل کے حل کیلئے ملک کے ہر شہری کو آئین کی بالادستی کیلئے کام کرنا چاہئے تاکہ ملک خوشحال اور ملک کے چاروں صوبے ترقی کی راہ پر تیزی کے ساتھ گامزن ہوں۔

 

انہوں نے کہا کہ جذباتی نعروں سے عوام کو درغلانے والے ذاتی مفادات کیلئے لڑرہے ہیں۔ عوامی مفاد میں سیاست کرنے والے عوام کے سامنے اپنے پارٹی کا منشور رکھتے ہیں۔ اے این پی کے تاریخی سیاسی بیانئے امن، جمہوریت اور ترقی کو عوامی پزیرائی اے این پی کی انسان دوست سیاست کی تقلید ہے۔